24  فروری‬‮  2018
تازہ ترین

مسلم لیگ ن کے دو باغی گروپس بن گئے ، کتنے اراکین اسمبلی چوہدری نثا ر کیساتھ شامل ہونے کو تیار ہیں؟ ن لیگ میں کھلبلی مچ گئی

مسلم لیگ ن کے دو باغی گروپس بن گئے ، کتنے اراکین اسمبلی چوہدری نثا ر کیساتھ شامل ہونے کو تیار ہیں؟ ن لیگ میں کھلبلی مچ گئی
مسلم لیگ ن کے دو باغی گروپس بن گئے ، کتنے اراکین اسمبلی چوہدری نثا ر کیساتھ شامل ہونے کو تیار ہیں؟ ن لیگ میں کھلبلی مچ گئی
اسلام آباد(نیوزڈیسک)دوبڑے گروہ ن لیگ چھوڑ سکتے ہیں سول خفیہ اداروں کی رپورٹ اسی ((80ایم ان ایز نواز شریف کے نیب کیسز اور سپریم کور ٹ میں نا اہلی کی مدت کے فیصلے کا انتظار کر رہے ہیں ۔سزا کی صورت میں نواز شریف کی سیاست ختم ،ساتھ رہنا سیاسی موت ہو گی :بعض ارکان اسمبلی کا موقف ۔

بظاہر ساتھ کھڑے سینئر رہنما نواز شریف کو چھوڑ سکتے ہیں،ایک گرو پ چودھری نثار ساتھ جا سکتا ہے ۔چودھری نثار کو فوری پارٹی سے فارغ کیا گیا تو اس کے اثرات برے ہوں گے ۔نواز شریف کو سزا ہونے اور سپریم کورٹ سے نا اہلی کی مدت کے حوالے سے فیصلہ ان کے خلاف آنے کی صورت میں ن لیگ کے اندر دو بڑے گروپ نواز شریف کا ساتھ چھوڑ سکتے ہیں ،ایک گروپ چوہدری نثار کی طرف جا سکتا ہے ۔سول خفیہ ادروں کی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ ن لیگ کے اندر گروپنگ موجود ہے اور بہت سے سینئر ارکان جو بظاہر تو نواز شریف کے ساتھ کھڑے نظر آتے ہیں مگر وہ بہت جلد پارٹی کو چھوڑ سکتے ہیں ۔ذرائع کے مطابق رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پوٹھوہار ریجن سے تعلق رکھنے والے ایک

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

صوبائی وزیر نے توباقاعدہ یہ مہم شروع کر رکھی ہے کہ شہباز شریف کو آگے آنا چاہئے مریم کسی صورت قا بل قبول نہیں جبکہ08ایسے ایم ایز ہیں جو نواز شریف کے نیب کیسز اور سپریم کورٹ میں نا اہلی کی مدت کے حوالے سےفیصلے کا انتظار کر رہے ہیں ۔ان میں اراکین اسمبلی کا کہنا ہے کہ نواز شریف کو سزا کی صورت میں نوازشریف کی سیاست ختم ہو جائے گی تو اس صورت میں نواز شریف کے ساتھ رہنا سیاسی موت ہوگی۔ن لیگ کے اہم ترین ذمہ دار کو ملنے والی ان رپورٹس کے بعد یہ چیک کرنا شروع کر دیا گیا کہ کتنے لوگ چوہدری نثار کے ساتھ جا سکتے ہیں اور کتنے پارٹی کو چھوڑ کر دوسری جماعت میں جا سکتے ہیں ۔ذرائع کے مطابق رپورٹ میں یہ بھی لکھا گیا ہے کہ اگر فوری طور پر چوہدری نثار کو پارٹی سے فارغ کیا گیا تو اس کے پارٹی پر برے اثرات ہونگے اور اگر فوری ان کی زبان بند نہ کی گئی تو بھی پارٹی کو نقصان پہنچے گا پارٹی میں ایک اور بڑے گروپ کے حوالے سے بھی انکشاف کیا گیا ہے اور اس گروپ کو بظاہر تو جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے ن لیگی رکن اسمبلی بنا رہے ہیں مگر ان کے رابطے شریف خاندان کی ایک اور اہم شخصیت سے بھی ہیں ۔ذرائع کے مطابق مریم نوازشریف نے ان حالات سے نمٹنے کے لیے کام شروع کر دیا ہے۔

انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مین
loading...