115

سروسز ہسپتال میں سٹریچرز پر مریض نہیں اینٹیں اٹھائی جانے لگیں

مال مفت دل بت رحم، سروسز ہسپتال میں مریضوں کی سہولت کے لیے پڑے سٹریچرز کو عملے نے ریڑھی بنا لیا۔ لواحقین نے غیرذمہ داری پر اعلیٰ حکام سے نوٹس لینے کامطالبہ کیا ہے۔

سروسز ہسپتال میں سہولیات دعوؤں تک محدود رہ گئیں۔ ہسپتال کا عملہ سٹریچر سامان لانے، لے جانےکیلئے استعمال کرنےلگا۔ سٹریچر پراینٹیں اور باقی سامان شفٹ کیا جارہا ہے۔ جس کے باعث سٹریچرز خراب ہوجاتے ہیں۔ ریڑھی کا استعمال کرنے کے بجائے سٹریچر کو ریڑھی بنا لیا گیا۔

ہسپتالوں میں پہلے ہی مریضوں کیلئے سٹرکچر کی کمی کاسامنا ہے۔ ہسپتال کاعملہ سٹرکچر پرتعمیراتی سامان بھی لے جانے سے گریزنہیں کرتا۔ سروسز ہسپتال میں عملے کی غیرذمہ داری پرکوئی پوچھنے والا نہیں۔ مریضوں اور لواحقین نے غیرذمہ داری پر اعلیٰ حکام سے نوٹس لینے کامطالبہ کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں